Home / خبریں / ڈاکٹرمشتاق احمد وانی : آثار حرف حرف

ڈاکٹرمشتاق احمد وانی : آثار حرف حرف

٭ڈاکٹر مول راج
اسسٹنٹ پروفیسرمحکمہ اعلیٰ تعلیم(جموں کشمیر)
(مرتّب)


نام: مشتاق احمد وانی
والد: محمد اسداللہ وانی(مرحوم)
والدہ: مہتاب بیگم (مرحومہ)
سنِ ولادت: 3 مارچ1960؁ء
جائے پیدائش: محلہ سروال۔ گاوں بہوتہ ،علاقہ۔مرمت ،تحصیل وضلع ڈوڈہ۔ریاست۔جموں کشمیر(ہندوستان)
پرا ئمری تعلیم: سنٹرل اسکول بہوتہ
میٹرک: گورنمنٹ ہائی اسکول گوہا مرمت 1980ء؁
بی۔اے: گورنمنٹ ڈگری کالج بھدروا ہ 1985؁ء
ایم۔ اے(اردو): جموں یونی ورسٹی 1988؁ء
پی۔ایچ ڈی: جموں یونی ورسٹی1999 ؁ء موضوع ’’تقسیم کے بعد اُردو ناول میں تہذیبی بحران‘‘
بی۔ایڈ: جموں یونی ورسٹی 2003؁ء
ڈی۔لِٹ: روہیل کھنڈ یونی ورسٹی بریلی( اُترپردیش) موضوع ’’اُردو ادب میں تانیثیت‘‘ 2012؁ء
افسانہ نگاری کا آغاز: 9 198 ؁ء
پہلا افسانہ: تڑپتے پنچھی
تصانیف
1۔ ہزاروں غم (افسانوی مجموعہ) 2001؁ء
2۔تقسیم کے بعد اُردو ناول میں تہذیبی بحران (تحقیق و تنقید) 2002؁ء
3۔ آئینہ در آئینہ (تحقیقی و تنقیدی مضامین) 2004؁ء
4۔ میٹھا زہر (افسانوی مجموعہ) 2008؁ء
5۔ اعتبار و معیار (تحقیقی و تنقیدی مضامین)2011؁ء
6۔ اُردو ادب میں تانیثیت 2013 ؁؁ء
7۔ شعورِ بصیرت (تحقیقی و تنقیدی مضامین)2014؁ء
8۔ اندر کی باتیں (افسانوی مجموعہ)2015؁ء
9۔ قبر میں زندہ آدمی (افسانوی مجموعہ)2019؁ء
10۔ کیا حال ہے جاناں! (افسانوی مجموعہ) 2019؁ء
11۔ ترسیل و تفہیم (تحقیقی و تنقیدی مضامین) 2019؁ء
12۔ تناظر وتفکر( تحقیقی و تنقیدی مضامین)2019؁ء
13۔ خارستان کا مسافر(خود نوشت سوانح عمری)زیرطبع
14۔نئی تنقیدی معنویت(تحقیقی و تنقیدی مضامین)زیرطبع
15۔ارتکازِ فکر(تحقیقی و تنقیدی مضامین)زیر طبع
16۔تنقیدی فکر وفن( تحقیقی و تنقیدی مضامین)زیر طبع
17۔آج میں کل تُو( افسانے) زیر طبع
18۔زبان وبیان(تحقیقی و تنقیدی مضامین)زیر طبع
انعاما ت و اعزازات
1۔بہترین افسانہ نگار انعام 2010ء ؁افسانہ کلب ملیر کوٹلہ پنجاب کی جانب سے
2۔افسانہ کلب ملیر کوٹلہ پنجاب نے مارچ 2014ء ؁میں ایک مومینٹو اور سرٹیفکیٹ عطا کیا۔
3۔وقارِ ادب انعام 2014؁ ء ریاستی اُردو ساہتیہ اکادمی ممبئی مالیگاوں ،(مہا راشٹرا )
4۔اعتبار و معیار (تحقیقی و تنقیدی مضامین)پر 2014ء ؁میں اُردو اکادمی لکھنو کی جانب سے/- 5000روپے نقد انعام
5۔کاوش بدری انعام 2014ء ؁عربی ، فارسی اور اردو یونی ورسٹی مدراس (تامل ناڈو)
6۔افسانہ کلب ملیر کوٹلہ پنجاب نے مارچ2015ء ؁میں ایک مومینٹو اور سرٹیفکیٹ عطا کیا۔
7۔تانیثی ادب کی خدمات کے لیے وشاکھا پٹنم کی ایک ادبی تنظیم (Asnam Shakin)نے جنوری 2016ء ؁میں ایک مومینٹو اور
سرٹیفکیٹ دیا۔
8۔اردو ادب کی خدمات کے لیے 2016ء؁ میں گلوبل ایچیو ر انعام ممبئی میں دیا گیا۔
9۔بہار اُردو اکادمی نے 2016ء ؁میں’’ شعورِ بصیرت ‘‘ (تحقیقی وتنقیدی مضامین)پر 10000/- روپے نقداور ایک سرٹیفکیٹ
سے نوازہ۔
10۔ 2018ء؁ میںALMIGHTY International society (Regd.) ملیر کوٹلہ پنجاب نے ’’کر شن چندر انعام ‘‘
سے نوازہ۔
11۔ 15 دسمبر2018ء ؁کو باباغلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی راجوری (جموں کشمیر) نے یوم تاسیس کے موقعے پر ممتاز محقق ایوارڈ سے نوازہ ۔
ایوارڈ میں دولاکھ روپے ریسرچ گرانٹ ،مومینٹو اور سند شامل۔
12۔10دسمبر 2018ء؁ کو اندور یونیورسٹی(ایم پی) نے محمد حسین وانی کو ’’مشتاق احمد وانی :حیات اور ادبی خدمات‘‘کے موضوع پر پی ایچ ڈی
کی ڈگری تفویض کی۔
13۔ستمبر 2019ء؁ کو اُترپردیش اُردو اکادمی نے ’’افہام وتفہیم ِزبان وادب‘‘پر 10000روپے کا انعام دیا۔
14۔2019؁ء میں ڈاکٹر مول راج نے مشتاق احمد وانی کی افسانہ نگاری پر لکھے مشاہیر ادب کے مضامین اورتاثرات کو’’مشتاق احمد وانی
کا افسانوی جمال وکمال‘‘کے نام سے ترتیب دے کر ایجوکیشنل پبلشنگ ہاوس دہلی سے شائع کرایا ۔
سیمینار وں میں شرکت اور مقالہ خوانی
1۔ساہتیہ اکادمی، نئی دہلی میں منعقدہ دو روزہ قومی سیمینار 2012ء ؁میں ’’ منٹو کے افسانوں میں عورت کا کردار‘‘ کے عنوان سے مقالہ پیش کیا۔
2۔گورنمنٹ ڈگری کالج بیروا ہ سرینگر میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2013ء ؁میں ’’ صوبہ جموں میں اُردوافسانہ‘‘مقالہ پیش کیا۔
3۔ساہتیہ ا کادمی ،مالیگاؤں ( مہا راشٹر)میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2014ء ؁میں ’’ اردو افسانچہ میں انسانی نفسیات اورمعاشرے کی
عکاسی‘‘ کے عنوان سے مقالہ پیش کیا۔
4۔افسانہ کلب ملیر کوٹلہ پنجاب میں منعقدہ یک روزہ سمینار2014ء؁ میں ’’ نرنجن سنگھ تسنیم ایک گم شدہ افسانہ نگار ‘‘پر مقالہ پیش کیا۔
5ساہتیہ ا کادمی، نئی دہلی میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2015ء ؁میں ’’ شبلی بحیثیت ِمکتوب نگار‘‘ کے عنوان سے مقالہ پیش کیا۔
6۔افسانہ کلب ملیر کوٹلہ پنجاب میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار2015ء؁ میں ’’ سرگوشی‘‘ کے عنوان سے مختصر افسانہ پیش کیا۔
7۔اسپورٹ سوسائٹی ، نئی دہلی میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار2016ء ؁میں ’’ جموں کشمیر کا اردو سے رشتہ ‘‘ کے عنوان سے تحقیقی مقالہ پیش کیا۔
8۔وشاکھاپٹنم کی ادبی تنظیم (Asnam Shikan) میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2016ء ؁میں ’’اِکیسو یں صدی میں خواتین نظم نگار‘‘
کے عنوان سے تحقیقی مقالہ پیش کیا۔
9۔گورنمنٹ پی۔جی، کالج راجوری میں صابر مرزا پر منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2017ء ؁میں ’’ انتظارِ مرگ‘‘ کے عنوان سے مختصر افسانہ
پیش کیا۔
10۔بہار اردو اکادمی ، پٹنہ میں منعقدہ دو روزہ قومی سیمینار 2017ء ؁میں ’’ قبر میں زندہ آدمی ‘‘ کے عنوان سے مختصر افسا نہ پیش کیا۔
11۔گورنمنٹ پی۔جی، کالج راجوری میں منعقدہ دو روزہ بین الاقومی سیمینار 2017ء ؁میں ’’ یہاں اور وہاں‘ کے عنوان سے مختصر افسانہ
پیش کیا۔
12۔گورنمنٹ پی۔جی۔ کالج مہنڈر (پونچھ)میں منعقدہ یک روزہ قومی سیمینار 2017ء ؁میں ’’ سرسید احمد خان کی فکری نشونما‘‘ کے عنوان
سے مقالہ پیش کیا۔
13۔آلمئٹی بین الاقوامی انجمن(Almighty International Society) ملیر کوٹلہ پنجاب میںمنعقدہ دو روزہ قومی سیمینار
2017ء ؁میں ’’ مشر قی پنجاب میں معاصر اردو افسانہ‘‘ کے عنوان سے مقالہ پیش کیا۔
رسائل وجرائد میں شائع شدہ مضامین کی فہرست
1۔ ’’جموں و کشمیر میں اردو شاعرات‘‘ماہنامہ’ بیباک‘مالیگاوں،( مہا راشٹر) دسمبر 2008؁ء
2۔ ’’اکیسو یں صدی میں اردو افسانہ‘‘ ’پروازِ ادب‘،پٹیالہ (پنجاب) 2008؁ء
3۔ ’’ماضی اور حال میں اُردو نثر و نظم‘‘ ماہنامہ’بیباک‘ مالیگاوں،( مہاراشٹر) اپریل2009؁ء
4۔ ’’جموں وکشمیرمیں اردو مہاراجاوں کے دور سے مستقبل کے خدشات تک‘‘ ماہنا مہ’ شاعر‘(ممبئی)،ستمبر 2009؁ء
5۔ ’’کلامِ فیض کی مقبولیت کا راز‘‘ششماہی’ تسلسل‘جموں یونیورسٹی(جموں)دسمبر 2010؁ء
6۔ ’’قومی اتحاد میں اُردو کا رول‘‘ سہ ماہی’ روزن‘،(اُڑیسہ )ستمبر 2010؁ء
7۔ ’’گوپی چند نارنگ اردو ادب کا بحرِ بیکراں ‘‘ سہ ماہی ’انتساب‘( مدھیہ پردیش)ستمبر 2011؁ء
8۔ ’’محبت بھرے دل کا شاعر:میکش امروہی‘‘ ماہنامہ ’زریں شعاعیں‘(بنگلور) اکتوبر 2012؁ء
9۔ ’’پرویز مانوس: سلگتے معاشرے کا شاعر‘‘ سہ ماہی ’تحریک ِ ادب‘ (بنارس) اگست 2012 ؁؁ء
10۔ ’’جموں و کشمیر میں اردو تحقیق‘‘ ماہنامہ ’ شیرازہ‘ کلچرل اکیڈمی( سرینگر)، اپریل 2012؁ء
11۔ ’’اُردو غزل کا مستقبل: پروین کمار اشکؔ‘‘ ماہنا مہ ’سب رس‘ (حیدرآباد) ،جون 2012؁ء
12۔ ’’ رونق جمال:منفرد افسانہ نگار‘‘ ماہنا مہ’ شاعر‘(ممبئی)،اکتوبر 2013 ؁؁ء
13۔ ’’منٹو کے افسانوں میں عورت کا کردار‘‘ سہ ماہی ’قرطاس‘ (ناگپور ) 2013 ؁ء
14۔ ’’خالد حسین کی کہانیوں کے موضوعات اور زبان و بیان کا برتاؤ‘‘ سہ ماہی ’لمحے لمحے‘ ( اترپردیش) نومبر 2013؁ء
15۔ ’’اُردو افسانہ اور جموں و کشمیر کے افسانہ نگار‘‘ سہ ماہی ’فکروتحقیق‘ NCPUL (نئی دہلی )ستمبر 2013؁ء
16۔ ’’اردو میں تانیثی تنقید‘‘ ماہنا مہ ’شیرازہ‘ کلچرل اکیڈ می( سرینگر) اگست 2013؁ء
17۔ ’’جموں و کشمیر میں اُردو شاعری ۱۹۴۷ء؁ کے بعد‘‘ماہنا مہ ’شیرازہ‘ کلچرل اکیڈ می( سرینگر) 2014 ؁؁ء
18۔ ’’محمد شاہد پٹھان کا ذرِ نقد اک ذریں تصنیف‘‘ سہ ماہی ’قرطاس‘ ناگپوراکتوبر 2014؁ء
19۔ ’’صوبہ جموں میں اُردو افسانہ‘‘ ماہنا مہ ’شیرازہ‘ کلچرل اکیڈ می (سرینگر) مئی 2014؁ء
20۔ ’’رونق جمال : بھیانک سیاسی و سماجی صورت ِ حال کا ادیب‘‘ سہ ماہی ’قرطاس‘ (ناگپور)جون 2014؁ء
21۔ ’’ درد سے بھیگی تنہائی کا شاعر‘‘ سہ ماہی ’قرطاس‘ (ناگپور)اپریل 2014؁ء
22۔ ’’ اردو افسانے کا ایک معتبر نقاد: پروفیسر صغیر افراہیم‘‘ سہ ماہی ’تحریک ِ ادب‘ (بنارس) 2014؁ٗ؁ء
23۔ ’’صغیر افراہیم کے افسانے‘‘ سہ ماہی ’نگینہ ‘ (سرینگر) ستمبر 2014؁ء
24۔ ’’ حامدی کاشمیر ی کا نظریہ نقد: اکتشافی تنقید‘‘ سہ ماہی ’ انتساب‘ (مدھیہ پردیش) 2015؁ء
25۔ ’’شبلی بحیثیت ِ مکتوب نگار‘‘ سہ ماہی ’نگینہ(‘ سرینگر) جنوری 2015؁ٗ؁ء
26۔ ’’ کرشن چندر کے افسانوں میں نسائی استحصال‘‘ ماہنامہ ’شیرازہ‘ کلچرل اکیڈ می( سرینگر) اگست 2015؁ء
27۔ ’’نور شاہ اُردو افسانے کا نور‘‘ سہ ماہی ’نگینہ‘ (سرینگر) نومبر2016؁ٗ؁ء
28۔ ’’جموں میں اُردو نظم کا سفر‘‘ ما ہنامہ ’شیرازہ‘ کلچرل اکیڈ می( سرینگر) اگست 2016 ؁ء
29۔ ’’ریاست کی معاصر خواتین قلم کار‘‘ماہنامہ ’شیرازہ‘کلچرل اکیڈمی( سرینگر)2016؁ء
30۔ ’’احمد رشید:اُردو افسانے کا ایک اہم نام‘‘سہ ماہی ’حاشیہ ‘ ( اورنگ آباد)دسمبر2017؁ء
31۔ ’’سرائے فانی‘‘(حامدی کاشمیری کی رحلت پہ مضمون) سہ ماہی’ چہار سُو‘راولپنڈی (پاکستان )اپریل 2019؁ء
32۔ ’’آہ …میرے اُستاد محترم پروفیسر ظہورالدّین!‘‘ماہنامہ ’سب رس‘ (حیدر آباد)،مارچ 2019؁ء
33۔ ’’آہ ! پروفیسر حامدی کاشمیری‘‘سہ ماہی ’جہان ِ اُردو‘(دربھنگہ بہار)مارچ 2019؁ء
34۔ ’’کرشن چندر :مظاہرِ فطرت اور نا آسودہ ذہنوں کا عکّاس‘‘سہ ماہی( دربھنگہ بہار)،جون 2019؁ء
رسائل و جرائد میں شائع شدہ افسانے
1۔ ’’ پنجر ے میں مورنی‘‘سہ ماہی ’صدا‘ (سرینگر) 2008؁ء
2۔ ’’ افراتفری میں پھنساآدمی‘‘ ماہنامہ’ شاعر‘(ممبئی) 2008؁ء
3۔ ’’باغی ‘‘ ماہنامہ’زریں شعاعیں‘(بنگلور )ستمبر 2009؁
4۔ ’’ فتنہ‘‘ ماہنامہ’بیباک‘مالیگاوں،( مہارشٹر ) اگست 2009؁ء
5۔ ’’ جسم خور کیڑا‘‘ ماہنامہ’بیباک‘مالیگاوں،( مہارشٹر ) مئی 2010؁ء
6۔ ’’ چھپا سانپ‘‘ ماہنامہ’بیباک‘مالیگاوں ،(مہارشٹر )جولائی2011؁ء
7۔ ’’ سرگوشی‘‘ ماہنا مہ ’ سب رس‘ (حیدر آباد) اکتوبر 2011؁ء
8۔ ’’اندر کی باتیں‘‘ دو ماہی ’ پرواز ِ ادب‘ (پٹیالہ )جون 2012؁ء
9۔ ’’ ایک اہم سوال‘‘ ماہنامہ’بیباک‘ (مہارشٹر) نومبر2013 ؁؁ء
10۔ ’’ مجھے ایک دن گھر جانا ہے‘‘ سہ ماہی ’قرطاس‘ لندن(یوکے) 2017؁ء
11۔ ’’انتظار ِمرگ‘‘ سہ ماہی ’حاشیہ‘ (اورنگ آباد)، 2017؁ء
16۔ ’’ریٹ لسٹ‘‘ماہنامہ’سب رس‘)حیدر آباد(،ستمبر 2018؁ء
17۔ ’’ریٹ لسٹ‘‘ماہنامہ ’شاعر‘ )ممبئی(اکتوبر 2018ء؁
18۔ ’’انوکھا رشتہ‘‘ماہنامہ’سب رس‘)حیدر آباد(،جون 2018ء؁
19۔ ’’پانچ سال کا بن باس‘‘ماہنامہ ’شاعر‘)ممبئی( ،جولائی 2019ء؁
کتب میں شامل مضامین
1۔ ’’ اقبال اور جدید اردو شاعری ایک بصیرت افروز تحقیقی مقالہ‘‘ ’پریمی رومانی فکرو فن‘ مرتب ،محمد اسداللہ وانی، 2014؁ء
2۔ ’’ اشتیاق سیدایک منفرد افسانہ نگار‘‘ ’ اشتیاق سید کی فنی جہات‘ مرتب: بادل باری ایم ۔کے( ممبئی) 2014؁ء
3۔ ’’ رفیق شاہین : بحیثیت مترجم‘‘ ’بیرونی ممالک کے شہکار افسانے‘ مرتب ڈاکٹر مجیب شہزر،ؔ علی گڑھ 2014؁ء
4۔ ’’ پرویزمانوس ’’مٹھی بھر چھاوں ‘‘کے تناظر میں‘‘ ’مٹھی بھر چھاوں‘ افسانوی مجموعہ پرویز مانوس سرینگر 2015 ؁؁ء
5۔ ’’مشاہیر ِادب کے خطوط برج پریمی کے نام پر ایک نظر‘‘ ’برج پریمی حیات و ادبی خدمات‘‘ مرتب : پریمی رومانی ، جموں 2015؁ء
6۔ ’’ اکیسویں صدی میں خواتین نظم نگار‘‘ ’ اکیسویں صدی میںاردو کی خواتین قلم کار‘ مرتب عثما ن انجم وشاکھاپٹنم 2016؁ء
7۔ ’’ اصغر ویلوری کی شعری استعد اد‘‘ ’ اصغر شناسی‘‘ مرتب ڈاکٹر حیات افتخار( مدراس)2016؁ء ؁ٗ
8۔ ’’ روبینہؔ میر کی شاعری‘‘ ’تفسیر ِ حیات‘ شعری مجموعہ روبینہ میر راجوری 2016؁ء
9۔ ’’ مناظر عاشق ہرگانوی کی حیران کن کہانیاں‘‘ ’ مناظر عاشق ہرگانوی کی افسانوی جہتیں‘ مرتب عذرا مناط 2017 ؁ء
10۔ ’’اردو ادب کی چاندنی‘‘مشمولہ۔’صادقہ نواب سحر ‘مرتّبہ،
11۔ ’’نظام الدّین سحرؔ کی سحر انگیزی‘‘مشمولہ،نظام الدّین سحر :حیات ،شخصیت اورعلمی وادبی خدمات‘2018؁ء
اخبارات میں شائع شُدہ مضامین
1۔ ’’ تعلیم و تدریس کی ضیا پاشیاں‘‘ کشمیر اعظمیٰ ستمبر 2013؁ء
2۔ ’’ حامدی کاشمیر ی کا نظریہ ٔ نقد: اکتشافی تنقید‘‘ کشمیر اعظمیٰ فروری 2014؁ء
3۔ ’’مجیب شہزؔر : صداقت و لطافت کی نشاندہی کرنے والا شاعر‘‘ اُڈان اگست 2015 ؁ء
4۔ ’’ اوم پرکاش شاکر کا شعری رویّہ ‘‘ اُڈان ، اکتوبر 2015؁ء
5۔ ’’ ایثار کشمیری کی ایک کہانی: اندھیر ی رات کا مسافر‘‘ کشمیر عظمیٰ 2015؁
6۔ ’’ اقبال اور تصور ِ نسواں‘‘ کشمیر عظمیٰ جولائی 2015؁ء
7۔ ’’ انجم عثمانی کی ایک کہانی: ایک بڈھا کا تجزیہ‘‘ اُڈان ستمبر 2015؁ء
8۔ ’’کرن سنگھ کرن کی سخنوری‘‘ اُڈان، فروری 2015؁ء
9۔ ’’ اکیسویں صدی میں اردو کے مسائل‘‘ اُڈان، اپریل 2015؁ء
10۔ ’’ دیپک کنول کے افسانوں میں مشترکہ تہذیب کی جھلکیاں‘‘ کشمیر عظمیٰ ،مئی 2016؁ء
11۔ ’’ غلام نبی خیال کی قلمی خوبصورتی‘‘ کشمیر اعظمیٰ جولائی 2016؁ء
12۔ ’’ بر ِ صغیر کی جنگ ِ آزادی اور اردو شاعری‘‘ کشمیر عظمیٰ ،اگست2016؁ء
13۔ ’’شیخ بشیر احمد کی کہانیوں میں کشمیر کا درد‘‘ کشمیر عظمیٰ ، مئی 2016؁ٗ؁ء
14۔ ’’نیلوفر ناز نحوی کے افسانوں میں نسائی رنگ‘‘ کشمیر عظمیٰ ، جنوری 2016؁ء
15۔ ’’ افسانہ ستی کا تجزیہ‘‘ اُڈان اکتوبر 2016؁
16۔ ’’ پروفیسر جاوید مسرت‘‘ اذانِ سحر، جولائی2017؁ء
18۔ ’’ آہ پروین کمار اشک‘‘ کشمیر عظمیٰ ، جولائی 2017؁ء
19۔ ’’ عبدلمجید بھدرواہی کی افسانہ نگاری‘‘ اُڈان، اپریل 2017؁ء
20۔ ’’ مناظر عاشق ہرگانوی : حیران کن ادبی شخصیت ‘‘ اُڈان، دسمبر 2017؁ء
21۔ ’’ محمد خورشید اکرم سوز‘‘ کشمیر عظمیٰ ، دسمبر 2017؁ء
22۔ ’’ اکیسویں صدی میں اردو نظم نگار خواتین‘‘ لازوال، نومبر 2017؁ء
23۔ ’’ نریجن سنگھ تسنیم : ایک گُم شدہ افسانہ نگار‘‘ لازوال ،اپریل 2017؁ء
24۔ ’’ جموں تا وشاکھاپٹنم ‘‘ لازوال ،جولائی 2017؁ء
25۔ ’’ شاہبازؔراجوروی کا’’ اعراف‘‘کشمیر عظمیٰ ‘مئی 2018؁ء
26۔ ’’خورشید احمد بسملؔ:شاعرانہ مزاج میں صوفیانہ رنگت‘‘کشمیرعظمیٰ، اگست2018؁ء
27۔ خواجہ احمد عباس :فلمی اور ادبی دُنیا کی ایک بڑی شخصیت‘‘ کشمیر عظمیٰ ،ستمبر2018؁ء
28۔ شہنشاہ ظرافت :مشتاق احمد یوسفی کی ابدی خاموشی‘‘کشمیرعظمیٰ ،نومبر2018؁ء
29۔ ’’ ریاست جموں و کشمیر میں اردو عدمِ تحفظ سے دوچار‘‘ کشمیرعظمیٰ، مئی 2018؁ء
30۔ ’’فدا راجوروی کے ادبی سروکار‘‘کشمیر عظمیٰ ، اگست 2018؁ء
اخبارات میں شائع شُدہ افسانے
1۔ ’’ ہاتھ میں ڈنڈا منہ میں گالی‘‘ کشمیر عظمیٰ ، مارچ 2016؁ء
2۔ ’’ حاضر جواب‘‘ کشمیر عظمیٰ، ستمبر 2016؁ٗ؁ء
3۔ ’’ قبر میں زندہ آدمی‘‘ کشمیر عظمیٰ، اکتوبر 2016؁ٗ؁ء
4۔ ’’انتقام‘‘ کشمیر اعظمیٰ، دسمبر 2016؁ء
5۔ ’’ معاوضہ‘‘ کشمیر اعظمیٰ ، نومبر 2016؁ٗ؁ء
6۔ ’’چار چہرے‘‘ کشمیر عظمیٰ ، دسمبر 2016؁ء
7۔ ’’انتظار ِ مرگ‘‘ کشمیر عظمیٰ، اپریل 2016؁ء
8۔ ’’بند آنکھوں کی عظمت‘‘ کشمیر عظمیٰ ، جون 2016 ؁ء
9۔ ’’کار ِخیر‘‘ کشمیر عظمیٰ ، ستمبر 2017؁ٗ؁ء
10۔ ’’ انوکھا رشتہ‘‘ کشمیر عظمیٰ ، اکتوبر 2017؁ء
11۔ ’’ واپسی‘‘ کشمیر عظمیٰ ، مارچ 2017؁ء
12۔ ’’سب کی ماں‘‘ کشمیر عظمیٰ دسمبر 2017؁ء
13۔ ’’ آثار ِ قیامت‘‘ اُڈان، دسمبر 2017 ؁؁ء
14۔ ’’ یہاں اور وہاں‘‘ کشمیر عظمیٰ اگست 2017 ؁
15۔ ’’ ڈراونی آوازیں‘‘ کشمیر عظمیٰ ، جنوری 2018؁ء
16۔ ’’ میرا کام تیرے نام‘‘ کشمیر عظمیٰ فروری 2018؁ء
ڈاکٹر مشتاق احمد وانی کی اردو ادبی رسائل و جرائد میں شمولیت
1۔ ماہنامہ ’’شاعر‘‘(ممبئی)
2۔ ماہنامہ’’ اردو دنیا‘‘(دہلی)
3۔ ماہنامہ ’’بیباک‘‘(مالیگاوں مہاراشٹر)
4۔ ماہنامہ ’’بیسویں صدی‘‘(دہلی)
5۔ ماہنامہ ’’شیرازہ‘‘(کلچرل اکیڈمی جموں کشمیر)
6۔ دو ماہی ’’پروازادب‘‘(پٹیالہ پنجاب)
7۔ ماہنامہ ’’پرواز‘‘(لندن)
8۔ سہ ماہی ’’فکروتحقیق‘‘(دہلی)
9۔ سہ ماہی ’’مباحثہ‘‘(پٹنہ)
10۔ سہ ماہی ’’قرطاس‘‘(ناگپور)
11۔ سہ ماہی ’’اصناف ادب‘‘(بہار)
12۔ ماہنامہ ’’نگینہ ‘‘(کشمیر)
13۔ سہ ماہی ’’انتساب‘‘(مدھیہ پردیش)
14۔ سہ ماہی ’’تحریک ادب‘‘(بنارس)
15۔ ماہنامہ’’ جہاں نما‘‘(گنگوہ)
16۔ سہ ماہی ’’افق ادب‘‘(جھارکھنڈ)
17۔ ماہنامہ’’شاندار‘‘(اعظم گڑھ)
18۔ ماہنامہ ’’رہنمائے تعلیم‘‘(دہلی)
19۔ سہ ماہی ’’رنگ‘‘(دھنباد بہار)
20۔ ششماہی ’’تسلسل‘‘(جموں یونیورسٹی)
21۔ سہ ماہی’’ مژ گاں‘‘(کلکتہ)
22۔ سالنامہ’’ ترسیل‘‘(فاصلاتی نظام تعلیم کشمیر یونیورسٹی)
23۔ ماہنامہ ’’زریں شعاعیں‘‘(بنگلور)
24۔ سہ ماہی ’’بزم ادب‘‘(کشمیر)
25۔ سہ ماہی ’’ابجد‘‘(بہار)
26۔ سہ ماہی ’’لمحے لمحے‘‘(بدایوں یوپی)
27۔ ماہنامہ’’ تریاق‘‘(ممبئی)
ڈاکٹر مشتاق احمد وانی کے توسیعی لیکچر
1۔ 2011؁ء میں لکھنو میں Mass communicationکے زیر اہتمام’’اددو زبان کی اہمیت و افادیت‘‘کے موضوع پہ
لیکچر دیا اور ’’باغی‘‘نام کی کہانی سنائی۔
2۔ کشمیر سینٹرل یونیورسٹی میں 2013؁ء میں ’’ آج کا اردو افسانہ‘‘کے موضوع پہ لیکچر دیا۔
3۔ گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج ادھم پور میں 2014؁ء میں’’اردو شعرو ادب میںتانیثیت‘‘کے موضوع پہ لیکچر دیا۔
4۔ اگست 2014؁ء میں گورنمنٹ ڈگری کالج براے خواتین ادھم پور میں ’’اردو افسانے کاتاریخی ارتقا اور اسکے فنی لوازمات‘‘ پہ لیکچر دیا۔
5۔ مئی2015؁ء میں گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج براے خواتین گاندھی نگر جموں میں ’’اردو ادب میں تانیثی رجحانات‘‘پہ لیکچردیا
اور ’’بیٹی‘‘نام کی کہانی پڑھ کرسنائی۔
6۔ 8جون سے 13جون2015؁ء تک سٹیٹ انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشن جموں میں’’اردو ناول ایک تعارف‘‘’ ترقی پسند تحریک‘‘
جدید اردو افسانہ‘‘ ’’عصری معاشرہ اور اخلاقی اقدار کی اہمیت‘‘ اور ’’اردو کا صوتیاتی نظام ‘‘موضوعات پہ لیکچر دئیے۔
7۔ 1986ء؁ سے ریڈیو کشمیر جموں کے ادبی پروگرام ’’خرمن ‘‘سے وابستگی۔
ڈاکٹر مشتاق احمد وانی کی شخصیت اور فن پریونیورسٹیوں میں تحقیقی کام
1۔ 2011؁ء میں جموں یونیورسٹی جموں توّی نے ’’ًمشتاق احمد وانی بحیثیت افسانہ نگار‘‘ ً کے موضوع پر شکتی دیوی کو ایم فل کی ڈگری تفویض کی۔
2۔ 2015؁ء میں حیدر آباد یونیورسٹی نے ’’مشتاق احمد وانی کی افسانہ نگاری‘‘ کے موضوع پر ارشد احمد کوچھے کو ایم فل کی ڈگری تفویض کی ۔
3۔ 2018؁ء میں دیوی اہلیہ یونیورسٹی اندور(مدھیہ پردیش) نے ’’مشتاق احمد وانی : حیات اور ادبی خدمات ‘‘ پرمحمد حسین وانی کو پی ایچ ڈی
کی ڈگری تفویض کی۔
نجی زندگی
1۔ علاقہ مرمت(ضلع ڈوڈہ)سے مانتلائی تحصیل چہنینی۔ ضلع ادھم پور میں ہجرت 1982؁ء میں۔
2۔ ازدواجی زندگی میں داخلہ:6 ،اکتوبر1991؁ء میں۔
۔ رفیقہ حیات کا نام:راشدہ اختر ،لیکچرر اُردو (10+2)
4۔ اولاد: رضاالرحمن(بیٹا) الیکٹریکل انجینئرنگ سے تربیت یافتہ اور صبا کریم(بیٹی) میڈیکل سائنس میں زیر تعلیم۔
5۔ ضلع ادھم پور سے ضلع جموں ، سنجواں، فردوس آباد میں اپنے آشیانے میں تاریخ رہائش6،اپریل2011؁ء
7۔ پتہ: لین نمبر ۳،ہاوس نمبر ۷ ،فردوس آباد سنجواں ،جموں۔پن کوڈ نمبر180011
8۔موبائل نمبر:9419336120,7889952532
9۔ drmushtaqahmedwani@gmail.com
{…}

About ڈاکٹر محمد راغب دیشمکھ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top
error: Content is protected !!
Visit Us On TwitterVisit Us On Facebook